پشاور:کورونا کی دوسری لہر، جلسے، جلوسوں پر پابندی اور کاروبار کھلا رکھنے کا فیصلہ،این سی سی کے فیصلوں کے مطابق صوبے میں جلسے جلسوں پر پابند ہوگی۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات کامران بنکش اوروزیرصحت تیمورجھگڑا نے میڈیا کوبریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ این سی سی نے خیبرپختونخواسے متعلق اہم فیصلے کئے ہیں، کوروناکی دوسری لہرمیں تیزی سے اضافہ ہورہاہے،این سی سی کے فیصلوں کے مطابق صوبے میں جلسے جلسوں پر پابند عائد ہوگی۔

انکاکہنا تھا کہ ہم نے بھی کوروناخدشات اورعوام کی جان کے لئے رشکئی جلسہ کو ملتوی کیا، پی ٹی آئی نے جلسے میں لاکھوں افرادکامجمع اکٹھا کرنے کاہدف رکھاتھا،کامران بنگش کاکہنا تھا کہ ہم دیگرسیاسی جماعتوں سے اپیل کرتے ہیں کہ عوامی جلسے منسوخ کیاجائے،آغازہم نے اپنے گھرسے کیا،دیگرسیاسی پارٹیوں سے بھی پبلک گیدرنگ نہ کرنے کامشورہ دیتے ہیں

وزیرصحت تیمور جھگڑا کاکہنا تھا کہ ہماراہیلتھ سسٹم اتناٹھیک نہیں ،جتناہوناچاہیے تھا، ہیلتھ میں بہتری لانے کے لیے مذیدکوشش کررہے ہیں، صوبے میں اب تک کوروناکے2000سے کیسزکم ہے، روزانہ کے حساب سے4ہزارٹیسٹ کئے جاتے ہیں، ہماری صرف مریض کوسہولیات دینے کی کوشش نہیں ہوگی بلکہ معیشت کوبھی دیکھناپڑیگا، اپوزیشن کوعوامی مفادکومدنظرکرتے ہوئے،خودسے جلسہ ملتوی کرے۔