(پشاور): جمیعت علماء اسلام کے ناراض رہنماؤں مولانا گل نصیب اور دیگر رہنماوں کی پریس کانفرنس ،اگر ہمارے مزکرات اپنی جماعت کے ساتھ طے پائے تو اگلا الیکشن ساتھ کرینگے،اگر مزاکرات نہیں ہوئے تو اس وقت مناسب فیصلہ کرینگے ،جے یو آئی موروثی پارٹی بنایاجارہا ہے،ایک گھر میں مرکزی امیر صوبائی امیر اور دیگر عہدے تقسیم کئے گئے ہیں،یہ لوگ پارٹی پر قابض ہوگئے ہیں،قابض شخصیات ملک میں جمہوریت چاہتی ہے لیکن اپنی پارٹی میں نہیں،ان لوگوں کا قول وفعل میں تضاد ہے،ملک میں جمہوریت کا مطالبہ کرنے والے اپنی پارٹی میں تو جمہوریت لائی.

انہوں نے مزید کہا کہ جمیت علماء اسلام اس وقت اندرونی مسائل سے دوچار ہے ،ہمارے اجلاس میں یہ فیصلہ ہوا ہے کہ جو کمزوریاں ہے اس کو ختم کرنے کی کوشش کرینگے ،پی ڈی ایم حکومت کو توڑنے نکلی تھی خود توڑپوڑ کا شکار ہوچکی ہے،فلسطین کے حق میں عوام تو احتجاج کر رہے لیکن امت مسلماں کے حکمران خاموش ہے،پی ڈی ایم ریت کی دیوار تھی اس کے ہم پہلے سے خلاف تھے،ہماری تحریک اس وقت اُٹھی جب ہمیں سائڈ لائن پہ کیا گیا، ہم پارٹی میں رہ کر جدوجہد کررہے ہیں۔